April 14, 2024

Warning: sprintf(): Too few arguments in /www/wwwroot/bodyfitnessinfo.com/wp-content/themes/chromenews/lib/breadcrumb-trail/inc/breadcrumbs.php on line 253
هجمات الحوثيين على البحر الأحمر

فلسطینی ذرائع نے خبر رساں ادارے ’اے ایف پی‘ کو اطلاع دی ہے کہ گذشتہ ہفتے حماس کے رہ نماؤں اور حوثیوں کے درمیان اسرائیل کے خلاف “مزاحمتی کارروائیوں کو مربوط کرنے کے طریقہ کار” پر تبادلہ خیال کرنے کے لیے ایک ملاقات ہوئی تھی۔

“کوآرڈینیشن میکانزم کی تلاش”

ان ذرائع میں سے ایک نے اپنا نام شائع نہ کرنے کی درخواست پر بتایا کہ “گذشتہ ہفتے ایک اہم میٹنگ ہوئی جس میں حماس، اسلامی جہاد اور پاپولر محاذ برائے آزادی فلسطین تحریکوں کے سینئر رہ نماؤں نے حوثیوں کے ساتھ ملاقات کی۔”

انہوں نے مزید کہا کہ اس ملاقات کے دوران “اگلے مرحلے میں مزاحمتی کارروائیوں کے حوالے سے ان دھڑوں کے درمیان رابطہ کاری کے طریقہ کار پر تبادلہ خیال کیا گیا”۔

“بحیرہ احمر میں جاری آپریشنز”

ایک دوسرے ذریعے کے مطابق “حوثی گروپ نے میٹنگ کے دوران زور دے کر کہا کہ وہ بحیرہ احمر میں اسرائیل جانے والے بحری جہازوں کے خلاف اپنی کارروائیاں جاری رکھے گا۔”

ذریعے نے مزید کہا کہ ملاقات میں “فلسطینی دھڑوں کے ساتھ حوثیوں کے تکمیلی کردار، خاص طور پر اسرائیل کے رفح پر حملہ کرنے کے امکان کے بارے میں بھی تبادلہ خیال کیا گیا”۔

“حوثیوں کی نئی دھمکی”

جمعرات کو حوثی رہ نما عبدالمالک الحوثی نے اسرائیل سے منسلک بحری جہازوں پر حملوں کے دائرہ کار کو بڑھانے کا اعلان کیا تاکہ بحیرہ احمر کو عبور کرنے سے گریز کرنے والے بحری جہازوں کو شامل کیا جا سکے اور بحر ہند سے افریقی براعظم کی طرف رجا صالح کے ذریعے سفر کرنے والے جہازوں کو نشانہ بنایا جا سکے۔

19 نومبر سے حوثی بحیرہ احمر اور بحیرہ عرب میں تجارتی جہازوں کو نشانہ بنا رہے ہیں جن کے بارے میں ان کا کہنا ہے کہ وہ اسرائیل سے منسلک ہیں یا اس کی بندرگاہوں کی طرف جا رہے ہیں۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *